ماہ نامہ انشاء کا کرشمہ: کوّے کو سرخاب کے پر لگ گئے

کلکتہ:27اگست2021 (پریس ریلیز)
ماہنامہ انشاء نے اپنی اشاعت کے 36 ویں سال میں اپنا 26 واں خاص نمبر ’’کوّا شمارہ‘‘شایع کیا ہے۔اس موضوع پر کسی زبان میں یہ پہلا تخلیقی و تحقیقی کام ہے۔مدیرِ انشاء ف۔س۔اعجاز نے اپنے اَداریہ ’’کوّا اور فنونِ لطیفہ ‘‘ میں اس پیشکش کے پس منظر اور پیش منظر دونوں کی معنویت کو بیان کیا ہے۔
مشمولات میں کوّے کے بارے میں سائنسی علم کے علاوہ کوّوں کی قسمیں اور ان کے وجود کی تاریخی رمزیں، مختلف مذاہب ، ممالک اور کلچروں میں کوّے سے متعلق اساطیر (مائتھولوجیز)کے تذکرے و تشریحا ت موجود ہیں۔تمام مضامین دریافت کا درجہ رکھتے ہیں۔ جیسی اردو ادب میں کوّا، ایرانی تہذیب میںکوّے کی اہمیت اور اس کا کردار، کوّے کے ساتھ مکالمات : نظامی ؔ کا مجنوں ، خسروؔ کی لیلیٰ، ہندو اساطیر میں کوّا ، اسلامی معاشرے میں کوّے کا کردار، کوّے کی نجمیاتی اور رویائی ( خوابوں سے متعلق )تفسیریں، ہندی فلمی گیتوں میں کاگا اور تصوف اور اس ضمن میں بابا فریدا لدین گنج شکر کے دوہوں کے حوالے سے۔ ڈنمارک کے کہنہ مشق ادیب ، صحافی و مترجم نصر ملک کی ترجمہ کردہ اسکینڈے نیویا کی داستانوں کا ترجمہ اور ادب میں کوّوں او ر پہاڑی کوّوں کا تذکرہ۔ مزید ف۔س۔اعجاز کے مضامین ’’معدوم ہوتے گِدھ ہندوستانی پارسیوں کے لئے ایک سنگین مسٗلہ‘‘۔شیکسپیئر کے نفرت انگیز کوّے، کوّے کے جنازے میں کیا ہوتا ہے، جدید انگریزی شاعر ٹیڈ ہیوزؔ کی نظم ’’کوّے کا زوال‘‘ کا ترجمہ اور ترجمہ وغیرہ ایسی تحریریں یکجا کی گئی ہیں۔ بنگلہ دیش سے بھی ایک داستان ہے۔ دو انشائیے، چند بہت اچھے علامتی افسانیاور کوّے پر لکھی گئی بہت عمدہ نظمیں اور غزلیںاور کاگا ہندی فلمی گیتوں کا ایک سدا بہار انتخاب دیا گیا ہے۔
گلزار صاحب نے اپنی بیٹی بوسکی ؔکے لئے ایک داستان ’’بوسکی کا کوّا نامہ‘‘ لکھی تھی ۔ وہ اب پہلی بار انشاء میں پیش ہو رہی ہے۔ کوّے پر ان کی نظمیں بھی ہیں۔ یہی نہیں کوّا شمارہ کے سرورق کا خاکہ بھی گلزار صاحب نے بنایا ہے۔
کوّا شمارہ کی قیمت انڈیا میں 125/- روپے ہے اور بیرونِ ملک US$10 (ڈاک خرچ علیحدہ)۔ برائے رابطہ :

Mahnama Insha,Insha Publications
25-B, Zakaria Street, Kolkata. 700073 .
Ph: 9830483810. email: inshapublications@yahoo.co.in

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے