لاؤڈ اسپیکر کا پر میشن ایک سال کا کیا جائے اور فیس معاف کی جائے :گلزار احمد اعظمی

ممبئی 20؍ مئی
جمعیۃعلماء مہاراشٹر کے قانونی امداد کمیٹی کے سر براہ گلزار احمد اعظمی نے وزیر داخلہ حکومت مہاراشٹر ،اقلیتی امور کے انچارج وزیر جتیندر اوہاڑ اور مسلم کانگریسی رہنما جناب محمد عارف نسیم خان کو مکتوب روانہ کیا جس میں انہوں نے راج ٹھاکرے اور بی جے پی لیڈروں کے ذریعہ لائوڈ اسپیکر کے بہانے مہاراشٹر کے امن و امان کوتباہ و برباد کرنے کے ناپاک منصوبہ کو ،جسے موجودہ حکومت نے نہایت ہی خوش اسلوبی اور حکمت عملی کے ساتھ ناکام بنا دیا ہے ۔
سب سے پہلے میں حکومت مہاراشٹر کو مبارکباد پیش کرتا ہوں پھر تمام مسلمانوں کو بھی مبارکباد پیش کرتا ہوں کہ شر پسند عناصرکے بہکانے اور بھڑکانے کے باوجود حکومت کے اقدام سے فائدہ اٹھاتے ہوئے نا صرف لائوڈ اسپیکر کے لئےمقامی پولس اسٹیشنوں سے رابطہ قائم کیا بلکہ سپریم کورٹ کے احکام کی پوری پوری پاسداری بھی کررہے ہیں ۔
اس موقع پر حکومت مہاراشٹر اور جناب محمد عارف نسیم خان صاحب سے درخواست کروں گا کہ لائوڈ اسپیکر پرمیشن کا اجراء ایک ماہ کے بجائے ایک سال کے لئے کیا جائے اور اس کی ماہانہ فیس 660؍روپئے جو مقرر کی گئی ہے یہ بہت زیادہ ہے ،یہ مساجد پر ظلم ہے، اس لئے کہ اس کے اخراجات جھونپڑپٹیوں میں عوامی چندوں سےہی پورےہوتے ہیں ،ان کے پاس مستقل آمدنی کا کوئی ذریعہ نہیں ہوتا ہے۔لہٰذافیس کو فوراً ختم کیا جائے اور ایک سال کے لئے لائوڈ اسپیکر کا پر میشن جاری کیا جائے ۔