ذکی اشرف قرآن سینٹر و ماسٹر ذاکر قرآن سینٹر کمہرولی میں طلبہ و طالبات اور ان کے سرپرستوں سے انتظامیہ و اساتذہ نے کیا خطاب۔

کمہرولی/دربھنگہ: گزشتہ دنوں ذکی اشرف قرآن سینٹر و ماسٹر ذاکر قرآن سینٹر کمہرولی میں طلبہ و طالبات و ان کے سرپرستوں سے انتظامیہ/اساتذہ نے خطاب کیا۔ واضح رہے کہ جماعت اسلامی ہند کمہرولی یونٹ کی جانب سے یہ مراکز قائم کیے گئے ہیں جن میں غریب اور نادر بچوں کو مفت میں قرآن مجید کے ساتھ ساتھ اردو اور اسلامیات کی تعلیم بھی دی جاتی ہے۔ جناب نظیر احمد صاحب اور قاضی سجاد احمد صاحب کی سرپرستی میں یہ مراکز دن دونی رات چوگنی ترقی کر رہا ہے۔

مجلس سے خطاب کرتے ہوئے جناب نظیر احمد صاحب نے بتایا کہ علم کا حاصل کرنا ہر مسلمان مرد اور عورت دونوں پر فرض ہے۔ بچوں کے مستقبل کے حوالے سے مثال دے کر انہوں نے بتایا کہ جس طرح کسان کسی پودے کو سینچتا ہے اور اسے سنوارنے کا کام کرتا ہے۔ اس میں پانی اور کھاد دے کر اس کی دیکھ بھال کرتا ہے۔ پھر جب وہ بیج ایک تناور درخت بن جاتا ہے تو اسے غلہ اور پھل کی صورت میں اس کا محنتانہ حاصل ہوجاتا ہے۔ ٹھیک اسی طرح ہمیں اپنے بچوں کو سینچنے اور اس کے مستقبل کو سنوارنے کے لیے کسان کی طرح محنت کرنے کی ضرورت ہے۔ موصوف نے سرپرستوں سے بھی تعاون کرنے کی اپیل کی اور کہا کہ والدین اس اپنے بچوں کو وقت پر مکتب بھیجیں اور انہیں سینچنے کا کام کریں۔ انتظامیہ نے دونوں قرآن سینٹرز میں درس لے رہے بچوں کی حوصلہ افزائی کی اور دعاؤں سے نوازا۔ اس کے علاوہ قرآن سینٹر میں تدریس کار و امام جامع مسجد کمہرولی مولانا انوار الحق ندوی صاحب، مولانا عمران عالم ندوی صاحب اور ماسٹر قاضی سجاد احمد نے بھی بچوں سے خطاب کیا۔ اس موقع پر جناب شکیل افضل صاحب بھی شریک محفل تھے۔ اخیر میں دعا کے ساتھ اس تربیتی نشست کا اختتام ہوا۔