نبی سے سچی محبت آپ کے اخلاق کو اپنانے میں ہے: معین الدین سلفی

  • فلاح انسانیت ٹرسٹ اٹوا کی جانب سے پرسیا میں بتاریخ 23 اکتوبر 2022ء کو دعوتی پروگرام کا انعقاد

اٹوا/سدھارتھ نگر: 23 اکتوبر، ہمارا پیام(نامہ نگار)
آج کل بعض مسلمان نبی سے محبت کا دعوہ کرتے ہیں بازاروں سڑکوں پر نبی کی الفت کے نعرے لگاتے ہیں پورا دن سڑکوں کو جام کرکے راہگیروں کو پریشان کرتے ہیں غیر مناسب نفرت پر مبنی نعرے لگاتے ہیں لیکن جب ہم پیار ے نبی کی سیرت پڑھتے ہیں تو معاملہ اس کے الٹ نظر آتا ہےکیونکہ یہ سب نبی کا اخلاق نہیں تھا آپ نے راستوں میں بیٹھنے سے منع کیا اور بیٹھنا اگر ضروری ہو تو راستوں کے حقوق ادا کرنے نگاہیں نیچی رکھنے کسی کو تکلیف دینے سے بچنے وغیرہ وغیرہ کی تلقین کی اور اسی نبی نے بازاروں کو سب سے ناپسندیدہ قرار دیا
لیکن آج محبت رسول کے نام پر نبی کے طریقوں اور سنتوں کی دھجیاں اڑائی جاتی ہیں بلکہ نماز جیسی اہم عبادت کو بھی نظر انداز کر دیا جاتاہے جو رسول سے سچی محبت نہیں ہے بلکہ محض خام خیالی ہے نبی کے آمد کی خوشی سب کو ہے لیکن اس کا اظہار آپ کی پیروی میں ہے آپ کے اعلی اخلاق کو عام کرنے میں اور آپ کی رسالت اور اس کے مقاصد کو سمجھنے اور اس پر عمل پیرا ہونے میں ہے آپ کی رسالت بلکہ تمام نبیوں کی بعثت کا مقصد شرک وبدعات کا خاتمہ کرکے اللہ کے بندوں کو اللہ تعالیٰ کی عبادت سے جوڑنا تھا لیکن آج امت محمدیہ میں شرک وبدعات کی ایک بڑی لمبی فہرست موجود ہے جس سے صرف اسلام اور مسلمانوں کو دینی اور دنیاوی بدنامی اور نقصانات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جب کہ اسلام اور اس کے نبی کی مقبولیت اعلی اخلاق کی وجہ سے ہوئی اور اخلاق حسنہ کو ہی نیکی قراردیا گیا ہے لیکن مسلمانوں کے اندر اخلاق نام کی کوئی چیز موجود نہیں اسی وجہ سے آج کے نیوز چینل اعلانیہ مسلمانوں کو برے القابات سے یاد کرتی ہے بلکہ انھیں دہشتگرد کہتی ہے اور دنیا مان بھی لیتی ہے لیکن ہم مسلمان اپنے کردار سے یہ ثابت نہیں کر پاتے کہ ہم مسلمان ہیں ہم سے سلامتی آتی ہم مومن ہیں جن سے امن وامان کو فروغ ملتا ہے ۔
آج ہم سب کو نبی کے اخلاق و کردار کو اپنا کر دنیا کو بتانے کی ضرورت ہے کہ ہم ایسے نبی کے ماننے والے ہیں جس کو غیر مسلم بھی امین وصادق کہتے تھے آج بھی مائیکل ہارٹ جو خود ایک عیسائی تھا اس نے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو اپنی کتاب میں جو سو عظیم شخصیات پر مشتمل ہے اس کتاب میں پہلے نمبر پر رکھا اور اس کی وجہ آپ کا اخلاق ہے ان خیالات کااظہار مولانا معین الدین سلفی نے فلاح انسانیت ٹرسٹ اٹوا کے زیر اہتمام موضع پرسیا سدھارتھ نگر میں دینی پروگرام میں موجود سامعین کو خطاب کرتے ہوئے کیا
پروگرام کا آغاز حافظ صفی الرحمن فاؤنڈر فلاح انسانیت ٹرسٹ اٹوا کے مسحور کن تلاوتِ قرآن مجید سے ہوا ،بعدہ نعت کے چند اشعار کلیم اللہ ریانی نے پیش کیا۔
اس موقع پر کلام اختر سنابلی نے مسلمانوں کے باہمی حقوق کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ مسلمان مسلمان کا بھائی ہے ہر مسلمان کو چاہیے کہ وہ دوسرے مسلمان سے محبت کرے ،اس کے ساتھ اچھا برتاؤ کرے ملاقات کرے تو سلام کرے اور ہر مسلمان بھائی کے تئیں خیر خواہی کا جذبہ رکھے کیونکہ بغیر آپسی محبت کے ایمان مکمل نہیں اور جب تک ایمان مکمل نہیں جنت میں داخلہ نہیں اور محبت پیدا کرنے کا سبب سلام کو فروغ دینے میں ہے۔
اس دینی پروگرام میں عبد المجید ،عبدالمنان مستری،عین اللہ،مطیع اللہ،رواب علی،حافظ محمد خالد خیری،محمد معاذ۔مولانا یعقوب ،سمیع اللہ سلیم عرف بادشاہ، ظہیر ،محب اللہ ابو ہریرہ اور دیگر باشندگان پرسیاں موجود رہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے